Tips-on-Protecting-Social-Media-Account

Tips on Protecting Social Media Accounts

Cybersecurity expert Muhammad Asad Ul Rehman of Cyber Security Pakistan said in a statement about the security of social media accounts and information that users of WhatsApp, Facebook, Instagram and other social media should verify that they are using the official WhatsApp, Facebook, Instagram and other social media applications.

He said that internet users should only download verified applications and avoid downloading any application from any unverified source, otherwise users will not even know and hackers can easily steal information from their mobile phones.

He has advised to be careful about clicking on the Secret Message link which has been spreading rapidly recently as clicking on this link sends the browser cookies to the person who created this link. He further said that no link received from unknown sources should be clicked, otherwise the account may be hacked.

In addition, before entering any personal information such as phone number, password, ID card number etc. on any website or link, make sure that the website is secure and not a fake page created by a hacker.

Tips-on-Protecting-Social-Media-Account

سائبر سکیورٹی آف پاکستان کی جانب سے سائبرسکیورٹی ایکسپرٹ محمداسدالرحمن نے سوشل میڈیا اکاؤنٹس و انفارمیشن سکیورٹی کی حفاظت کے متعلق بیان میں کہا کہ واٹس ایپ، فیس بُک، انسٹا گرام و دیگر سوشل میڈیا کے صارفین اس بات کی تصدیق کریں کہ وہ واٹس ایپ، فیس بُک، انسٹا گرام و دیگر سوشل میڈیا کی آفیشل اپلیکیشن استعمال کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انٹر نیٹ صارفین صرف تصدیق شدہ اپلیکیشنز ہی ڈاؤنلوڈ کریں اور کسی غیر تصدیق شدہ ذرائع سے کسی بھی قسم کی اپلیکیشن ڈاؤنلوڈ کرنے سے اجتناب کریں بصورت دیگر صارفین کو پتا بھی نہیں چلے گا اور ہیکر ان کے موبائل سے با آسانی معلومات چرا سکتے ہیں۔انہوں نے حال ہی میں تیزی سے پھیلنے والے سیکرٹ میسج نامی لنک پر کلک کرنے سے محتاط رہنے کا مشورہ دیاہے کیونکہ اس لنک پر کلک کرنے سے براؤزر کے کوکیز اس لنک بنانے والے کے پاس چلے جاتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ انجان ذرائع سے آئے ہوئے کسی بھی قسم کے لنک پہ کلک نہ کیا جائے بصورت دیگر اکاؤنٹ ہیک ہو سکتا ہے۔ علاوہ ازیں کسی بھی ویب سائٹ یا لنک پر اپنی پرسنل معلومات مثلاً فون نمبر، پاسورڈ، شناختی کارڈ نمبر وغیرہ کی تفصیلات درج کرنے سے پہلے اس بات کی تسلی کر لیں کے وہ ویب سائٹ محفوظ ہو کسی ہیکر کی طرف سے بنایا جانے والا جعلی پیچ نہ ہو۔

Search